صحت کا دیسی علاج

گلے کے غدود میں شراب کے فائدے: جانئے کہ شراب کس طرح تھائرائیڈ کی بیماری کے مسائل کو دور کرتی ہے۔

گلے کے غدود کے لیے مولتھی: گلے کے غدود میں مولیتھی کا استعمال بہت فائدہ مند ہے۔ لیکوریس میں تھائرائیڈ کو کنٹرول کرنے کی خصوصیات ہیں۔ استعمال کرنے کا طریقہ سیکھیں-

کیا تھائیرائیڈ کے مریض گلے کے غدود میں ملتھی لے سکتے ہیں؟ گلے کے غدود میں شراب کتنی مفید ہے؟ گلے کے غدود ایک مسئلہ ہے جو مردوں اور عورتوں دونوں کو متاثر کرتا ہے۔ لیکن زیادہ تر خواتین کو اس بیماری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ گلے کے غدود کی وجہ سے جسم میں کئی طرح کے مسائل شروع ہو جاتے ہیں۔ گلے کے غدود کی وجہ سے کمزوری، تھکاوٹ، بے قاعدہ ماہواری، ڈپریشن، سانس کی تکلیف جیسے مسائل شروع ہوجاتے ہیں۔ یہی نہیں تھائیرائیڈ کی وجہ سے موٹاپے اور پتلے پن کا مسئلہ بھی پیدا ہوتا ہے۔ گلے کے غدود میں ہارمون کا توازن بگڑ جاتا ہے۔

 

درحقیقت، گلے کے غدود ایک گلٹی ہے جو گردن کے اگلے حصے میں واقع ہوتی ہے، جو گلے کے غدود ہارمون بناتی ہے۔ جب گلے کے غدود ہوتا ہے تو گلے کے غدود گلینڈ یا تو بہت زیادہ یا بہت کم پیدا کرتا ہے۔ اسے گلے کے غدود کا مسئلہ یا بیماری کہا جاتا ہے۔ جب بہت زیادہ ہارمون پیدا ہوتا ہے تو اسے ہائپر تھائیرائیڈزم کہتے ہیں۔ جب بہت کم ہارمون پیدا ہوتا ہے، تو اسے ہائپوتھائیرائڈزم کہتے ہیں۔ تھائیرائیڈ ہارمونز کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے روزانہ دوائیں لینا بہت ضروری ہے لیکن اگر آپ چاہیں تو اپنے تھائیرائیڈ کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے آیورویدک طریقے بھی آزما سکتے ہیں۔ مولتھی تھائیرائیڈ کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے ایک بہت ہی موثر اور فائدہ مند آیورویدک علاج ہے۔ شراب ذائقہ میں میٹھی ہوتی ہے۔ اس کا ٹکڑا چوسنے سے کھانسی، گلے کی خراش یا گلے کی بیماریوں کے تمام مسائل سے نجات مل سکتی ہے۔ جانئے شراب کا استعمال تھائرائیڈ میں کیسے فائدہ مند ہے۔

مولتھی میں غذائی اجزاء.(Nutrients in Mulethi)

تھائرائیڈ کے مریضوں کے لیے شراب کیسے فائدہ مند ہے؟(How mulethi beneficial for thyroid patients)

گلے کے غدود کے مسائل ان لوگوں میں زیادہ عام ہیں جو غیر فعال طرز زندگی، غیر صحت مند کھانے کی عادتیں یا غیر صحت بخش کھانے کی عادات، جسمانی سرگرمی کی کمی اور دباؤ والی زندگی گزارتے ہیں۔ آیوروید کے مطابق، جب کسی شخص کے جسم میں وات، پٹہ اور کفہ دوشوں کا عدم توازن ہو جاتا ہے، تو اس حالت میں تھائرائیڈ کی علامات ظاہر ہوتی ہیں۔ گلے کے غدود کی علامات میں وزن بڑھنا، کمزوری، تھکاوٹ اور گردن کے گرد سوجن شامل ہیں۔ اس صورت حال میں شراب کا استعمال فائدہ مند ہو سکتا ہے۔ تھائرائیڈ کے مریضوں کے لیے شراب کا استعمال بہت مؤثر ہے۔ شراب میں موجود کیلشیم اور پروٹین پٹھوں کو مضبوط بناتا ہے، جسمانی کمزوری کو دور کرتا ہے۔ تھائرائیڈ کے مریض شراب کے استعمال سے اس کی علامات کو کم کر سکتے ہیں۔

شراب گلے کے لیے بہت فائدہ مند ہے۔ اس میں تھائرائڈ کو کنٹرول کرنے کی خصوصیات ہیں  شراب گلے کے غدود ہارمون کو کنٹرول میں رکھنے کے ساتھ ساتھ تھائرائیڈ کینسر سے بھی بچاتی ہے۔ درحقیقت، ٹرائیٹرپینائڈ گلائسرریٹینک ایسڈ ہے، جو تھائیرائڈ کینسر کے خلیوں کی تشکیل کو روکتا ہے۔ اگر آپ شراب کا باقاعدگی سے استعمال کرتے ہیں تو تھائرائڈ کو کنٹرول میں رکھا جا سکتا ہے۔

تھائرائڈ میں مولتھی کا استعمال کیسے کریں۔(how to consume mulethi in thyroid)

گلے کے غدود کے مریض اپنے تھائیرائیڈ ہارمون کو کنٹرول میں رکھنے، تھائیرائیڈ کی علامات کو کم کرنے کے لیے شراب پی سکتے ہیں۔ گلے کے غدود کے مریض لیکوریز پاؤڈر گرم پانی میں ملا کر لے سکتے ہیں۔ اگر آپ چاہیں تو ملٹھی کا پانی بھی پی سکتے ہیں۔ شراب کا پانی باقاعدگی سے پینے سے تھائیرائیڈ کی کمزوری، تھکاوٹ پر قابو پایا جا سکتا ہے۔ اس کے علاوہ شراب کا ایک ٹکڑا بھی چبا جا سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: یہ 8 تیل سردیوں میں پھٹی ایڑیوں کا مسئلہ دور کر دیں گے، باقاعدگی سے لگانے سے پاؤں نرم اور خوبصورت ہو جاتے ہیں

 

اگر آپ ایلوپیتھک ادویات کے ساتھ ساتھ گھریلو علاج سے بھی اپنے گلے کے غدود ہارمون کو کنٹرول میں رکھنا چاہتے ہیں تو آپ شراب پی سکتے ہیں۔ لیکن آپ اسے استعمال کرنے سے پہلے ایک بار ڈاکٹر کی رائے ضرور لیں۔

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button