صحت مند غذا

کیلا اور پپیتا کبھی ایک ساتھ نہ کھائیں، ماہرین سے جانیں یہ مرکب کیوں نقصان دہ ہے۔

پپیتا صحت کے لیے کئی طرح سے فائدہ مند ہے۔ ساتھ ہی کیلا صحت کے لیے بھی فائدہ مند ہے۔ لیکن کیا ہم ان دونوں کو ایک ساتھ کھا سکتے ہیں؟

پپیتا ایک ایسا ہی پھل ہے، جو کئی اہم غذائی اجزاء سے بھرپور ہے۔ یہی نہیں بلکہ یہ ایک بہت ہی آسان پھل ہے جسے کہیں بھی مل جاتا ہے۔ پپیتے کا باقاعدگی سے استعمال پیٹ کے تمام مسائل پر قابو پانے میں مدد کرتا ہے۔ اس کے ساتھ یہ کولیسٹرول کی سطح کو کم کرنے میں بھی بہت مددگار سمجھا جاتا ہے۔ اس کا استعمال کچا اور پکی دونوں صورتوں میں فائدہ مند ہے۔ اس کے ساتھ ہی، کیلے کی بات کی جائے تو کیلے کئی اہم غذائی اجزاء سے بھی بھرپور ہوتے ہیں۔ اس کے استعمال سے آپ کے جسم کو وافر مقدار میں پوٹاشیم حاصل ہوتا ہے، جو آپ کو پٹھوں کو مضبوط رکھنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔ لیکن کیا کیلا اور پپیتا ایک ساتھ کھایا جا سکتا ہے؟ اگر آپ کیلا اور پپیتا ایک ساتھ کھائیں تو کیا ہوتا ہے؟  کہ کیلا اور پپیتا ایک ساتھ کھانے سے جسم پر کیا اثر پڑتا ہے؟

کیا کیلا اور پپیتا ایک ساتھ کھا سکتے ہیں.(Can banana and papaya be consumed together)

ماہر غذائیت کا کہنا ہے کہ کیلا اور پپیتا کا ایک ساتھ استعمال کرنا فائدہ مند ہے یا نہیں، یہ آپ کے نظام انہضام پر منحصر ہے۔ کچھ لوگوں کی قوت ہضم کمزور ہوتی ہے۔ ایسے میں اگر وہ کیلا اور پپیتا ایک ساتھ کھاتے ہیں تو ان کی مشکلات میں اضافہ ہو سکتا ہے۔ ایک ہی وقت میں، کچھ لوگوں کو اس کے ساتھ کوئی مسئلہ نہیں ہے.

تاہم یہ بات ذہن میں رکھیں کہ آیوروید کے مطابق کیلا اور پپیتا کو مخالف پھل مانا جاتا ہے۔ ایسی حالت میں آیوروید میں انہیں ایک ساتھ نہ کھانے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔ ان کو ایک ساتھ کھانے سے نظام انہضام سے متعلق مسائل پیدا ہو سکتے ہیں۔ اگر آپ کیلے اور پپیتے کو ایک ساتھ زیادہ مقدار میں کھاتے ہیں تو اس سے بدہضمی، قے، متلی، گیس اور بار بار سردرد جیسے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  سبز چائے زیادہ پینا بھی صحت کو بہت سے نقصان پہنچا سکتا ہے، ماہرین سے ان کے بارے میں جانیں۔\

can we eat banana and papaya together in urdu

ان لوگوں کو پپیتا اور کیلا نہیں کھانا چاہیے۔(These people should not eat papaya and banana)

  • ماہرین کا خیال ہے کہ اس مرکب کے علاوہ اگر آپ کو دمہ یا سانس کی تکلیف ہو تو پپیتا کا استعمال ڈاکٹر کے مشورے پر ہی کرنا چاہیے۔ دراصل پپیتے میں پاپین نامی عنصر پایا جاتا ہے جس کی وجہ سے کچھ لوگوں کو الرجی کی شکایت ہوتی ہے۔ ایسی صورت حال میں پپیتے کے استعمال سے سانس کی تکلیف بڑھ سکتی ہے۔ اس کے علاوہ کیلا اور پپیتا ایک ساتھ بالکل نہ کھائیں۔ یہ آپ کا مسئلہ مزید خراب کر سکتا ہے۔
  • حاملہ خواتین کو پپیتا کا استعمال نہ کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔ ایسے میں پپیتے اور کیلے کا امتزاج بھی آپ کے لیے صحیح نہیں ہو سکتا۔
  • یرقان کے مریضوں کو بھی پپیتا نہ کھانے کا مشورہ دیا جاتا ہے۔ دراصل اس میں موجود پاپین اور بیٹا کیروٹین یرقان کے مسائل کو بڑھا سکتے ہیں۔ جس کی وجہ سے زخم جلدی ٹھیک نہیں ہوتے۔
  • پپیتا اور کیلا ایک ساتھ کھانے سے پیٹ خراب ہو سکتا ہے۔ اس سے پیٹ میں درد، درد اور اسہال جیسے مسائل پیدا ہو سکتے ہیں۔
  • جب آپ کو نزلہ زکام جیسی پریشانی ہو تو شام کو کیلا کھانے سے پرہیز کریں۔ اس سے آپ کی پریشانی بڑھ سکتی ہے۔
  • اگر جسم میں پوٹاشیم کی زیادتی ہو تو کیلے کا استعمال نہ کریں۔ جس کی وجہ سے جسم میں کئی سنگین مسائل پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کالے رنگ کی یہ 5 غذائیں آپ کو صحت مند رکھیں گی، روزمرہ کی خوراک میں ضرور شامل کریں۔

کچا پپیتا کھانے کے بہت سے نقصانات ہوسکتے ہیں، ماہرین سے جانیے ان کے بارے میں

پپیتے اور کیلے کا استعمال صحت کے لیے نقصان دہ ہو سکتا ہے۔ اس لیے ذہن میں رکھیں کہ ان پھلوں کے آمیزے کا استعمال نہ کریں۔ آیوروید میں ایسے پھلوں کا استعمال جسم کے لیے مہلک بتایا گیا ہے۔ خاص طور پر اگر آپ پہلے سے ہی کسی پریشانی کا شکار ہیں تو ایسے مرکب کے استعمال سے گریز کریں۔

 

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button