صحت مند غذا

تھائیرائیڈ کے مریضوں کے لیے ناریل کا پانی پینا فائدہ مند ہے، جانیے اس کے 5 فائدے

تھائیرائیڈ میں ناریل پانی پینے کے بہت سے فائدے ہیں۔ یہ وزن کم کرنے میں بھی مدد کرتا ہے۔

تھائرائڈ ایک چھوٹی تتلی کی شکل کا غدود ہے جو گردن کے قریب واقع ہے۔ یہ ٹریچیا کو گھیر لیتا ہے۔ یہ غدود تھائرائڈ ہارمون بناتا ہے. جو جسم کے بہت سے اہم کام انجام دینے میں مدد کرتا ہے۔ اس کی وجہ سے ہمارے جسم میں میٹابولزم کا عمل قابو میں رہتا ہے. اور جسم آسانی سے کیلوریز جلانے کے قابل ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ، تھائیرائڈ ہارمونز تھکاوٹ، پٹھوں میں درد اور موڈ میں تبدیلی کا سبب بن سکتے ہیں۔ اس کی وجہ سے آپ کے جسمانی وزن میں بھی اچانک اضافہ ہوسکتا ہے لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ ناریل پانی پی کر آپ تھائیرائیڈ کے مسئلے کو کم کرسکتے ہیں۔ کم کیلوریز والا مشروب ہونے کے ساتھ ساتھ، ناریل کا پانی اینٹی آکسیڈنٹس، امینو ایسڈز، انزائمز، بی کمپلیکس وٹامنز اور وٹامن سی جیسے غذائی اجزاء سے بھی بھرپور ہوتا ہے، جسے آپ تھائرائیڈ کی علامات کو کم کرنے کے لیے استعمال کر سکتے ہیں۔

coconut water benefits for thyroid in urdu

تھائیرائیڈ میں ناریل پانی کے فوائد.(Coconut water benefits in Thyroid)

1. وزن کم کرنے میں مددگار.(Helpful in Weight Loss)

تھائیرائیڈ کے مسئلے میں آپ کے جسم میں تھائیرائیڈ ہارمونز کا توازن بگڑ جاتا ہے جس کی وجہ سے آپ کا نظام انہضام متاثر ہوتا ہے۔ نظام انہضام کے متاثر ہونے کی وجہ سے آپ کا کھانا اچھی طرح ہضم نہیں ہوتا اور آپ کا وزن اچانک بہت بڑھ سکتا ہے۔ کئی بار آپ نے دیکھا ہوگا کہ جن لوگوں کو تھائرائیڈ کا مسئلہ ہوتا ہے۔ ان کا وزن بڑھ سکتا ہے۔ اس کے لیے آپ صبح ناریل کا پانی پی سکتے ہیں۔

2. سوزش کو کم کرنے میں فائدہ مند ہے۔(Beneficial in reducing inflammation)

تھائرائیڈ کی وجہ سے آپ کو جسم میں سوجن یا زخم والے حصے میں سوجن کا مسئلہ ہو سکتا ہے۔ اس سے تھائرائیڈ گلٹی کے قریب گردن کے علاقے میں سوجن ہو سکتی ہے۔ اس کے علاوہ پٹھوں میں درد کا مسئلہ بھی ہوسکتا ہے لیکن ناریل کے پانی میں اینٹی انفلامیٹری اور امینو ایسڈ پائے جاتے ہیں جو سوزش کے مسئلے کو کم کرسکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: شوگر کے مرض میں کاجو کھانے سے یہ 5 مسائل دور ہوتے ہیں، ماہر غذائیت سے فائدے جانیں۔

3. نظام انہضام کو ٹھیک کرتا ہے۔(Heals the Digestive System)

جیسا کہ ہم پہلے ہی بتا چکے ہیں کہ ناریل کے پانی کا استعمال آپ کے نظام ہاضمہ کو بہتر بنا سکتا ہے۔ درحقیقت ناریل کے پانی میں فیٹی ایسڈز اور ٹرائگلیسرائیڈز پائے جاتے ہیں جو کہ نظام انہضام کے مسائل میں آرام فراہم کرتے ہیں۔ یہ بدہضمی، گیس اور قبض کے مسائل میں بھی آرام دیتا ہے۔

4. موڈ درست کریں۔(Get the mood right)

ناریل کا پانی اینٹی آکسیڈنٹس، وٹامن سی اور وٹامن بی کمپلیکس جیسے غذائی اجزاء سے بھرا ہوتا ہے، جو آپ کے موڈ کے جھولوں کو کم کرنے اور آپ کو دن بھر تروتازہ رکھنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: تھائیرائیڈ کی وجہ سے آنکھوں میں یہ مسائل ہو سکتے ہیں، وجہ اور احتیاطی تدابیر جانیے ڈاکٹر سے

5. جسم کو گرم رکھیں.(Keep the body warm)

تھائیرائیڈ کے مسئلے میں بہت سے لوگوں کو نزلہ زکام کا مسئلہ بھی ہو سکتا ہے۔ اس کے علاوہ ہاتھ پاؤں بھی ٹھنڈے ہو سکتے ہیں لیکن ناریل کے پانی کا استعمال آپ کے جسم کو گرم رکھنے میں بھی مددگار ثابت ہوتا ہے اور نزلہ و زکام سے بھی نجات دلا سکتا ہے۔

coconut water benefits for thyroid in urdu

ناریل کا پانی ان طریقوں سے استعمال کریں۔(Consume coconut water in these ways)

1. آپ صبح خالی پیٹ ناریل کا پانی پی سکتے ہیں۔ آپ اسے ہفتے میں 2 بار پی سکتے ہیں۔

2. اس کے علاوہ آپ اسے ناشتے کے ساتھ بھی پی سکتے ہیں۔

3. اگر آپ کو ناریل کے پانی کا ذائقہ پسند نہیں ہے تو آپ اس میں کسی اور پھل کا رس ملا کر اسموتھی بنا سکتے ہیں۔

4. اس کے علاوہ آپ اس کی چٹنی اور ناریل کے دودھ کو بھی اپنی خوراک میں استعمال کر سکتے ہیں۔

5. اس کے علاوہ آپ کھانے میں ناریل کا تیل استعمال کر سکتے ہیں اور آپ اسے سلاد کے ساتھ بھی کھا سکتے ہیں۔

تھائیرائیڈ میں ناریل کا پانی پینے کے بہت سے فائدے ہیں. لیکن اگر آپ کو گردے سے متعلق مسائل ہیں تو ڈاکٹر کے مشورے کے بغیر ناریل کا پانی نہ پییں۔ تھائرائیڈ کے مسئلے میں بھی اگر آپ کو ناریل کا پانی پینے سے زیادہ پریشانی ہوتی ہے. تو اس کا استعمال نہ کریں۔ اس کے علاوہ اگر آپ کو صحت کا کوئی خاص مسئلہ ہے تو ڈاکٹر کے مشورے کے بغیر ناریل کا پانی نہیں پینا چاہیے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
AllEscort