جلد کی حفاظت:skincare in Urdu

جسم میں خارش سے نجات کے لیے اس دیسی تیل کو سونے سے پہلے لگائیں، بنانے کا طریقہ جانیں۔

ناریل کے تیل، کافور اور لونگ سے بنا یہ تیل جسم میں خارش اور خارش کو کم کر سکتا ہے۔ آئیے جانتے ہیں کہ اسے استعمال کرنے کا طریقہ۔

خارش اور خارش اکثر لوگوں کو پریشان کرتی ہے۔ اس کی بہت سی وجوہات ہو سکتی ہیں۔ جیسے کیڑوں کے کاٹنے اور الرجی کی وجہ سے۔ لہذا، کئی بار سروسس، داد اور ایکزیما کی وجہ سے۔ اس لیے بعض اوقات کسی ردعمل کی وجہ سے یا جسم کے اندر ضرورت سے زیادہ گرمی کی وجہ سے دانے نکل آتے ہیں۔ ان تمام مسائل کے لیے لوگ اکثر ادویات اور کریموں کا استعمال کرتے ہیں۔ لیکن کچھ گھریلو ٹوٹکے ان مسائل کو کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں۔ جیسے نیم کے پتوں کا پیسٹ، پودینے کا تیل اور ہلدی صندل۔ اسی طرح ایک بہت پرانا تیل ہے جسے لگانے سے خارش اور خارش کم ہوتی ہے۔ جی ہاں، آپ اس تیل کو روایتی طریقے سے بنا سکتے ہیں۔ اس تیل کو بنانے کے لیے ناریل کا تیل، کافور اور لونگ کا استعمال کیا جاتا ہے۔ تو آئیے آپ کو تفصیل سے بتاتے ہیں کہ اس تیل کو بنانے کا طریقہ اور اس کے فوائد۔

oil for rash and itching in urdu

ناریل کے تیل، کافور اور لونگ سے یہ خاص تیل بنائیں.(Make this special oil from coconut oil)

آپ یہ خاص تیل تینوں ناریل کے تیل، کافور اور لونگ کو ملا کر بنا سکتے ہیں۔ اسے بنانے والا پہلا

  • 20 چمچ ناریل کا تیل لیں۔
  • اب اس میں 10 لونگ ڈال دیں۔
  • اب کافور لیں اور تقریباً 3 کھانے کے چمچ کا پاؤڈر بنا لیں۔
  • اب اسے دیگچی میں ڈال کر گیس پر رکھ دیں۔
  • کچھ ہی دیر میں یہ تیل پکنا شروع ہو جائے گا اور اس کی تیز بو محسوس ہو گی۔
  • اب گیس بند کر دیں اور تیل گرم ہونے پر استعمال کریں۔

یہ بھی پڑھیں: چہرے سے مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات کو دور کرنے کے لیے ان 5 آسان طریقوں پر عمل کریں۔

اس دیسی تیل کے فوائد.(Benefits of this desi oil)

1. دانوں کو کم کرتا ہے۔(Reduces Grains)

آپ نے دیکھا ہوگا کہ جسم پر کئی بار سرخ دانے نکل آتے ہیں۔ کبھی وہ چھوٹے ہوتے ہیں اور کبھی بڑے ہوتے ہیں۔ اس لیے بعض اوقات ایک خاص قسم کے بیکٹیریا کی وجہ سے بھی یہ دانے بڑھ جاتے ہیں۔ اس صورت میں، یہ تیل بہت اچھا کام کرتا ہے. اس کی اینٹی بیکٹیریل خاصیت پمپل میں موجود بیکٹیریا کو مار کر انہیں خشک کر دیتی ہے۔ پھر اس کے مسلسل استعمال سے اس میں کمی آنے لگتی ہے۔ اس کے لیے آپ کو بس اتنا کرنا ہے کہ اس تیل کو بنا لیں اور رات کو سونے سے پہلے اپنے جسم پر لگائیں۔ صبح اٹھنے کے بعد آپ دیکھیں گے کہ اس تیل سے آپ کے دانے آہستہ آہستہ ختم ہونے لگے ہیں۔

2. خارش کو دور کرتا ہے۔(Relieves itching)

ناریل کے تیل، کافور اور لونگ سے تیار کردہ یہ خصوصی تیل بھی خارش کو کم کرنے میں موثر کام کرتا ہے۔ اس کی اینٹی بیکٹیریل اور ریش کو راحت بخش خصوصیات خارش کو کم کرنے میں مددگار ہیں۔ اس کی اینٹی مائکروبیل خاصیت فعال ریشوں کو کم کرنے اور خارش کو دور کرنے میں مدد کرتی ہے۔ اس طرح یہ خارش کو پرسکون کرنے کے ساتھ جلد کو بھی پرسکون کرتا ہے۔

3. سوزش کو کم کرتا ہے۔(Reduces Inflammation)

کافور اور لونگ دونوں میں سوزش کی خصوصیات ہوتی ہیں جو سوزش کو کم کرنے میں مددگار ہوتی ہیں۔ اگر کسی کو کہیں سوجن ہو یا سوزش کی وجہ سے شدید درد ہو تو اس نیم گرم تیل سے مالش کرنے سے سوجن اور اس کا درد کم ہو جاتا ہے۔ دراصل یہ تیل جسم میں دوران خون کو درست کرتا ہے اور پٹھوں کے درد سے نجات دلانے میں مدد کرتا ہے۔ کافور کی ایک خاص خاصیت یہ ہے کہ یہ تیل پٹھوں اور جوڑوں کے پرانے درد کو طویل عرصے تک کم کرنے میں بھی مدد کرتا ہے اور اس طرح یہ سوزش کو کم کرتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ایلوویرا اور لیموں لگانے کے فائدے: چہرے کے ان 5 مسائل کو دور کرنے کے لیے ایلو ویرا جیل اور لیموں کا رس لگائیں۔

oil for rash and itching in urdu

4. کمر کے نچلے حصے کے درد کو دور کرتا ہے۔(Relieves Lower Back Pain)

کافور اور لونگ دونوں پر مشتمل یہ تیل کمر کے نچلے حصے کے درد کو دور کرنے میں مدد کرتا ہے۔ کافور کا تیل اعصابی نظام کو بے حس اور ٹھنڈا کرتا ہے، پھر کمر کے دردناک حصے کو گرم کرتا ہے۔ اس طرح، یہ سخت جوڑوں اور پٹھوں میں گردش کو بڑھاتا ہے اور کمر کے درد کو کم کرتا ہے۔

ان سب کے علاوہ یہ تیل جوڑوں کے درد کو کم کرنے میں بھی مددگار ہے۔ آپ کو بس یہ کرنا ہے کہ اسے اپنے گھر میں بنائیں اور رات کو سونے سے پہلے لگائیں۔ اگرچہ آپ اسے کئی بار لگا سکتے ہیں لیکن اسے رات کو لگانے کے مزید فوائد ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button