خواتین کی صحت

حمل میں مسوڑھوں سے خون آنے کی یہ 5 وجوہات ہو سکتی ہیں، علامات اور احتیاط جانیں ڈاکٹر سے

حمل کے دوران مسوڑھوں سے خون بہنا ایک عام اور سنگین مسئلہ ہو سکتا ہے۔ ایسی صورت حال میں علامات اور بچاؤ کے بارے میں جاننا ضروری ہے۔

حمل کے دوران خواتین کے جسم میں بہت سی تبدیلیاں اکثر دیکھی جاتی ہیں۔ ان تبدیلیوں کے ساتھ خواتین کو کچھ مشکلات کا بھی سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ان مسائل میں سے ایک مسوڑھوں سے خون آنا ہے۔ کچھ خواتین ایسی ہوتی ہیں جنہیں حمل کے دوران مسوڑھوں میں سوجن، درد یا خون کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ایسے میں اس کے پیچھے کی وجہ جاننا ضروری ہے۔ آج کا مضمون اسی موضوع پر ہے۔ آج اس آرٹیکل کے ذریعے ہم آپ کو بتائیں گے کہ حمل کے دوران خواتین کے مسوڑھوں سے خون کیوں نکلتا ہے۔ بچاؤ کے بارے میں بھی جانیں۔

pregnancy bleeding gums during causes in urdu

حمل کے دوران مسوڑھوں سے خون آنے کی وجوہات.(Causes of bleeding gums during pregnancy)

حمل کے دوران مسوڑھوں سے بار بار خون آنے کے پیچھے کچھ سنگین یا کچھ عام وجوہات ہو سکتی ہیں۔ یہ وجوہات درج ذیل ہیں-

1- جب عورتیں زیادہ مٹھاس کھائیں تو ان کے مسوڑھوں سے خون نکل سکتا ہے۔ کیونکہ بہت زیادہ مٹھائیاں کھانے سے خواتین میں منہ کی گہا کے مسائل پیدا ہو سکتے ہیں جس کی وجہ سے خواتین مسوڑھوں سے خون آنے کے مسئلے کا شکار ہو سکتی ہیں۔

2.ہارمونز میں تبدیلی کی وجہ سے مسوڑھوں سے خون بھی نکل سکتا ہے۔ واضح رہے کہ حمل کے دوران ہارمون ایسٹروجن اور پروجیسٹرون میں تبدیلی آتی ہے جس کی وجہ سے مسوڑھوں کے خلیے کمزور ہونا شروع ہو جاتے ہیں۔ جب وہ خشک ہو جائیں تو مسوڑھوں سے خون بہہ سکتا ہے۔

3 – جب خواتین کے جسم میں ضروری غذائی اجزا کی کمی ہو۔ اس کے بعد بھی مسوڑھوں سے متعلق مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ ان غذائی اجزاء میں وٹامن سی، کیلشیم، فاسفورس اور وٹامن کے کی کمی شامل ہے۔ جب خواتین ضروری غذائی اجزاء کا استعمال نہیں کرتی ہیں تو پھر مسوڑھوں سے متعلق مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: حمل کے دوران بیٹھنے کا صحیح طریقہ کیا ہونا چاہیے؟ جانیے ماہرین سے

4- دوران حمل خواتین اگر ذیابیطس جیسے مسئلے کا شکار ہو جائیں تب بھی انہیں دانتوں اور مسوڑھوں کے مسئلے کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ واضح رہے کہ ذیابیطس کا مسئلہ میٹابولک بیماری ہے، جس کی وجہ سے خواتین کو مسوڑھوں سے متعلق مسائل کا بھی سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

5 – حمل کے دوران اگر خواتین اپنے دانتوں یا مسوڑھوں پر مناسب توجہ نہیں دیتیں یا انہیں صحیح طریقے سے صاف نہیں کرتیں تو یہ مسئلہ بھی ہو سکتا ہے۔

حمل کے دوران مسوڑھوں سے خون آنے کی علامات. (gums during pregnancy bleeding)

آئیے آپ کو بتاتے ہیں کہ مسوڑھوں سے خون آنا اپنے آپ میں ایک بڑی علامت ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ کچھ اور علامات بھی دیکھی جا سکتی ہیں جو کہ درج ذیل ہیں۔

1- خواتین کو گلے میں خراش محسوس ہوتی ہے۔

2 – کھاتے وقت درد محسوس کرنا۔

3- مسوڑھوں اور دانتوں کے درمیان خلا کا محسوس ہونا۔

5- دانتوں میں حساسیت کا احساس۔

6 – مسوڑھوں کا سرخ ہونا۔

7 – مسوڑھوں میں درد محسوس کرنا۔

یہ بھی پڑھیں: حمل کے دوران دمہ کا کیا سبب بن سکتا ہے؟ ڈاکٹر سے اس کی علامات جانیں

Young vomiting pregnant

حمل کے دوران مسوڑھوں سے خون بہنے کی روک تھام.( bleeding gums during pregnancy)

حمل کے دوران خواتین مسوڑھوں سے خون آنے کے مسئلے سے خود کو بچا سکتی ہیں۔ یہ دفاع مندرجہ ذیل ہیں-

1- حمل کے دوران خواتین کو اپنی زبانی صحت کا پورا خیال رکھنا چاہیے۔ ایسی صورتحال میں خواتین کے لیے ضروری ہے کہ وہ باقاعدگی سے اپنے دانت صاف کریں اور اپنے مسوڑھوں کو صاف رکھیں۔

2- حمل کے دوران خواتین کے لیے خود کو ہائیڈریٹ دیکھنا بھی ضروری ہے۔ خود کو ہائیڈریٹ رکھنے کے لیے انہیں وقتاً فوقتاً پانی پینے کو کہیں۔ اس سے مسوڑھوں کے خشک ٹشو کے مسئلے سے نجات مل سکتی ہے۔ خواتین اپنے آپ کو ہائیڈریٹ رکھنے کے لیے پھلوں کا جوس بھی پی سکتی ہیں۔

3- جیسا کہ ہم نے پہلے بتایا کہ مسوڑھوں کا مسئلہ ضروری غذائی اجزاء کی کمی کی وجہ سے بھی ہو سکتا ہے۔ ایسی صورت حال میں خواتین کو چاہیے کہ وہ اپنی خوراک میں ضروری غذائی اجزاء جیسے وٹامن سی، وٹامن کے، کیلشیم وغیرہ شامل کریں۔

نوٹ – مذکورہ بالا نکات سے پتہ چلتا ہے کہ حمل کے دوران مسوڑھوں سے خون آنے کے پیچھے کچھ عام اور کچھ سنگین وجوہات ہوسکتی ہیں۔ ایسی صورتحال میں خواتین مذکورہ احتیاطی تدابیر اپنا کر اس پریشانی سے بچ سکتی ہیں۔

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
AllEscort