خواتین کی صحت

حمل کے دوران مولی کا جوس پینے سے یہ 4 فائدے ملتے ہیں، ماہرین سے جانیے چند احتیاطی تدابیر اور نقصانات

یہ جاننا ضروری ہے کہ حمل کے دوران مولی کا رس پینا کتنا محفوظ یا کتنا غیر محفوظ ہے۔ جانیے فوائد، نقصانات اور احتیاطی تدابیر...

حمل کے دوران، خواتین کو اکثر سوچ سمجھ کر اپنی خوراک کی منصوبہ بندی کرنی پڑتی ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ حمل کے دوران عورت جو کچھ بھی کھاتی ہے. اس کا اثر جنین کی صحت پر پڑتا ہے۔ ہم مولی کے رس کے بارے میں بات کر رہے ہیں۔ یہ جاننا ضروری ہے کہ حمل کے دوران مولی کا رس خوراک میں شامل کرنا کتنا محفوظ اور کتنا غیر محفوظ ہے۔ آج کا مضمون اسی موضوع پر ہے۔ آج اس آرٹیکل کے ذریعے ہم آپ کو بتائیں گے کہ حاملہ خواتین کو مولی کا رس پینے سے کیا کیا فوائد حاصل ہوتے ہیں۔ اس کے ساتھ آپ اس کے نقصانات اور احتیاطی تدابیر کے بارے میں بھی جان لیں گے۔

radish juice during pregnancy in urdu

تحقیق کیا ہے.(Know About Research)

حمل کے دوران مولی کے جوس کے استعمال پر کئی تحقیقیں منظر عام پر آ چکی ہیں۔ یہ تحقیق درج ذیل ہے-

1- این سی بی آئی کی ایک تحقیق کے مطابق حمل کے دوران مولی کا رس پیا جا سکتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ مولی کے جوس میں سیلینیم موجود ہوتا ہے جو کہ حمل کے لیے ضروری غذائی اجزاء میں سے ایک ہے۔ آئیے آپ کو بتاتے ہیں کہ یہ جسم تک پہنچ کر اینٹی آکسیڈنٹ کا کام کرتا ہے اور مسلز کو مضبوط بنانے میں بھی مددگار ثابت ہوتا ہے۔ متعلقہ تحقیق پڑھنے کے لیے  کلک کریں.

2 – NCBI کی دوسری تحقیق کے مطابق حمل کے دوران مولی کا جوس پینے سے بچے میں پیٹ پھولنے کا مسئلہ پیدا ہو سکتا ہے۔ متعلقہ تحقیق پڑھنے کے لیے.

نوٹ- مذکورہ تحقیق کی بنیاد پر ہم کہہ سکتے ہیں کہ حاملہ خواتین کے لیے ضروری ہے کہ وہ اپنی خوراک میں مولی کا رس شامل کرنے سے پہلے ایک بار ماہرانہ مشورہ لیں۔ اس کے ساتھ محدود علم کا ہونا بھی ضروری ہے۔

یہ بھی پڑھیں : کیا حمل کے دوران مسالہ دار کھاناکھانا ٹھیک ہے؟ اس کے نقصانات اور احتیاطی تدابیر جانیں۔

حمل میں مولی کے رس کے فوائد.(benefits of radish juice in pregnancy)

حمل کے دوران مولی کا جوس پینا صحت کے لیے بہت سے فائدے رکھتا ہے۔ یہ فوائد درج ذیل ہیں-

1- پیٹ کے السر سے نجات.(Relief from stomach ulcers)

حمل کے دوران خواتین کو اکثر پیٹ کے السر کے مسئلے کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ خاص طور پر جو خواتین پہلے ہی پیپٹک السر کا شکار ہو چکی ہیں وہ اس مسئلے سے زیادہ پریشان ہیں۔ ایسی صورتحال میں یہ خواتین اپنی خوراک میں مولی کا رس شامل کرکے اس مسئلے پر قابو پا سکتی ہیں۔

2۔قبض کے مسئلہ سے نجات.(Relief from the problem of constipation)

حمل کے دوران اکثر خواتین کو قبض کا مسئلہ درپیش ہو سکتا ہے۔ ایسی حالت میں بتا دیں کہ مولی کا رس اس پریشانی کو دور کرنے میں مفید ہے۔ مولی کے رس میں فائبر اور پانی دونوں ہوتے ہیں۔ ایسی حالت میں اس کے استعمال سے قبض کے مسئلے سے نجات مل سکتی ہے۔

3 – ہاضمہ صحت مند ہونا چاہیے۔(Digestion should be healthy)

حمل کے دوران نظام انہضام کو صحت مند بنانے میں مولی کا رس آپ کے لیے بہت مفید ثابت ہو سکتا ہے۔ جیسا کہ ہم نے پہلے بتایا کہ مولی کے جوس میں فائبر موجود ہوتا ہے جو کہ معدے کے بہت سے مسائل کو دور کرکے ہاضمے کے کام کو بہتر بناتا ہے۔ ایسے میں حمل کے دوران مولی کا رس ملا کر نظام ہاضمہ کو صحت مند بنایا جا سکتا ہے۔

radish juice during pregnancy in urdu

4- ہائی بلڈ پریشر سے نجات.(High blood pressure)

حمل کے دوران خواتین کو اکثر ہائی بلڈ پریشر کا مسئلہ درپیش ہوتا ہے۔ ایسی صورتحال میں آپ کو بتاتے چلیں کہ مولی کا رس ہائی بلڈ پریشر کے مسئلے کو دور کرنے میں بہت مفید ثابت ہوسکتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ فائبر اور پوٹاشیم دونوں ہائی بلڈ پریشر کے مسئلے کو کم کرنے کے لیے ضروری غذائی اجزاء ہیں اور یہ دونوں مولی کے رس میں پائے جاتے ہیں۔ ایسی صورت میں اس کے استعمال سے ہائی بلڈ پریشر کا مسئلہ کم کیا جا سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: بچہ دانی کو صحت مند رکھنے کے لیے یہ 5 مشروبات پئیں، بنانے کا طریقہ اور فوائد جانیں۔

حمل میں مولی کا رس نقصان دہ.(radish juice harm in pregnancy)

حمل کے دوران کسی بھی چیز کا استعمال محدود مقدار میں کرنا چاہیے۔ زیادہ مقدار میں استعمال خواتین اور جنین کے لیے بہت سے مسائل کا باعث بن سکتا ہے۔ یہی حال مولی کے رس کا ہے۔ اس کے نقصانات درج ذیل ہیں-

1- حمل کے دوران اگر مولی کا جوس زیادہ پیا جائے تو پیٹ پھولنا، گیس کے مسائل وغیرہ ہو سکتے ہیں۔

2- مولی کا رس پینے سے خواتین کو بھی الرجی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

حمل کے دوران مولی کا جوس پینے کے لیے احتیاطی تدابیر
1- صرف تازہ مولی کا رس استعمال کریں۔

2- مولی کے رس کو خوراک میں شامل کرنے سے پہلے ایک بار ماہرین کا مشورہ ضرور لیں۔

3- صرف گھر کا بنا ہوا مولی کا رس استعمال کریں۔

4- مولی کا رس بناتے وقت مولی کو اچھی طرح دھو لیں۔

نوٹ – کئی تحقیقیں اس بارے میں سامنے آئی ہیں کہ حمل کے دوران مولی کا جوس پیا جا سکتا ہے یا نہیں۔ اسی طرح حاملہ خواتین کو اپنی خوراک میں مولی کا رس شامل کرنے سے پہلے ایک بار ماہرین سے مشورہ لینا چاہیے۔ اس کے علاوہ اگر خواتین کو مولی سے الرجی ہے تو وہ اس جوس کو فی الوقت خوراک میں شامل نہ کریں ورنہ ان کی صحت اور بچے کی صحت پر منفی اثرات پڑ سکتے ہیں۔

 

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
AllEscort