بچوں کی صحت

کیا آپ کا بچہ بھی بار بار کولڈ ڈرنک مانگتا ہے، جانیے اس سے ہونے والے نقصانات

کولڈ ڈرنکس کو صحت کے لیے اچھا نہیں سمجھا جاتا۔ اس لیے بچوں کو کبھی بھی کولڈ ڈرنکس نہیں دینا چاہیے۔ اس سے نقصان ہو سکتا ہے۔

آج کل کولڈ ڈرنکس کا رجحان بہت بڑھ گیا ہے۔ گھر ہو، دفتر ہو یا پارٹی، ہر جگہ لوگ کولڈ ڈرنکس پیتے دیکھے جا سکتے ہیں۔ لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ کولڈ ڈرنکس صحت کے لیے بہت نقصان دہ ہیں۔ اگر ہم بچوں کی بات کریں تو انہیں پینے کے لیے کولڈ ڈرنکس بالکل نہیں دینا چاہیے۔ ان میں چینی کی مقدار زیادہ ہونے کی وجہ سے بچوں کی صحت پر برا اثر پڑ سکتا ہے۔ کولڈ ڈرنکس پینے سے بچوں میں بلڈ شوگر بڑھنے کے ساتھ ساتھ موٹاپے کا بھی سبب بنتا ہے۔ تو آئیے تفصیل سے جانتے ہیں کہ بچوں کو کولڈ ڈرنکس پینے کے کیا نقصانات ہیں۔

بچوں کو کولڈ ڈرنکس دینے کے نقصانات.(Disadvantages of giving cold drinks to children)

  • کولڈ ڈرنکس بچوں کی صحت کو کئی طرح سے نقصان پہنچا سکتا ہے۔
  • کولڈ ڈرنکس میں شوگر کی مقدار زیادہ ہوتی ہے جو بچوں میں تیزی سے وزن بڑھانے کا باعث بنتی ہے۔
  • کولڈ ڈرنکس پینے سے بچوں کے جگر متاثر ہوتے ہیں۔
  • کولڈ ڈرنکس بچوں کی دماغی نشوونما کو بھی متاثر کر سکتا ہے۔ یہ بچوں میں یادداشت کی کمی کا باعث بن سکتا ہے۔
  • کولڈ ڈرنکس پینے سے بچوں کا پیٹ زیادہ دیر تک بھرا رہتا ہے، اس کی وجہ سے ان کی بھوک ختم ہونے لگتی ہے۔
  • اس کے استعمال سے بچوں کا معدہ بھی خراب ہو سکتا ہے۔
  • کولڈ ڈرنکس بچوں کی ارتکاز کو کم کر سکتا ہے۔
  • کولڈ ڈرنکس میں تیزابیت اور چینی کی مقدار زیادہ ہوتی ہے، جو بچوں کے دانتوں کو نقصان پہنچاتی ہے۔
  • کولڈ ڈرنکس کے مسلسل استعمال سے بچوں کے پیٹ کے گرد چربی جمع ہوجاتی ہے جس کی وجہ سے پیٹ کی چربی بڑھنے لگتی ہے۔
  • کولڈ ڈرنکس میں موجود کیفین بچوں کو پانی کی کمی کا باعث بن سکتی ہے۔
  • کولڈ ڈرنکس جسم کو ضروری وٹامنز اور منرلز کو جذب کرنے سے روک سکتا ہے۔
  • اس کا استعمال جسم میں انسولین کا توازن بگاڑ سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کیا دودھ پینے کے بعد بچے کا پیٹ بھرا ہوا ہے؟ ان 5 علامات سے پہچانیں۔

side-effects-of-aerated-or-fizzy-drinks-for-children-in-Urdu

یہ مشروبات بچوں کو دیں۔(Give these drinks to children)

بچوں کو پینے کے لیے عام پانی دیا جا سکتا ہے۔ اس سے بچوں کی پیاس بجھ جائے گی اور وہ ہائیڈریٹ بھی رہیں گے۔ آپ بچوں کو لیمونیڈ، شربت، جوس، شکنجی، فروٹ کاک ٹیل، گنے کا رس اور ناریل کا پانی بھی دے سکتے ہیں۔ یہ سب صحت کے لیے بہت فائدہ مند ہیں۔

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button