خواتین کی صحت

کیا حمل کے دوران مسالہ دار کھاناکھانا ٹھیک ہے؟ اس کے نقصانات اور احتیاطی تدابیر جانیں۔

حمل کے دوران مسالہ دار کھانے کا استعمال خواتین کی صحت کو متاثر کر سکتا ہے۔ ایسی صورتحال میں ضروری احتیاطی تدابیر اور نقصانات جانیں۔

حمل کے دوران خواتین کو اکثر مختلف چیزیں کھانے کا احساس ہوتا ہے۔ کبھی وہ کھٹی کی طرف دوڑتی ہے اور کبھی اسے محسوس ہوتا ہے کہ کوئی مسالہ دار چیز کھا رہی ہے۔ اس کے ساتھ ہی کچھ خواتین مصالحہ دار کھانا بھی کھاتی ہیں۔ لیکن سوال یہ ہے کہ کیا حمل کے دوران تیکھا مصالحہ پینا چاہیے؟ تیز مسالوں کا استعمال خواتین کے ساتھ ساتھ بچوں کی صحت پر کیسے اثر انداز ہوتا ہے؟ اس بارے میں جاننا بھی ضروری ہے۔ آج کا مضمون اسی موضوع پر ہے۔ آج ہم آپ کو اس آرٹیکل کے ذریعے بتائیں گے کہ حمل کے دوران زیادہ مسالہ دار کھانا صحت پر کیسے اثر انداز ہوتا ہے؟ اس کے ساتھ آپ کو اس کے نقصانات بھی معلوم ہوں گے۔ 

spicy food during pregnancy side in urdu

تحقیق کیا کہتی ہے(What does research say)

واضح کریں کہ حمل کے دوران مضبوط مصالحے کا استعمال نقصان دہ ہو سکتا ہے۔ ایسا کرنے سے خواتین کو نہ صرف صبح کی بیماری کا سامنا کرنا پڑتا ہے. بلکہ مضبوط مصالحوں کی وجہ سے سینے میں جلن کا مسئلہ بھی ہو سکتا ہے۔ اس سے متعلق تحقیق بھی منظر عام پر آگئی، تحقیق پڑھنے کے لیے. اس کے علاوہ ایک اور تحقیق سامنے آئی ہے جس کے مطابق حمل کے دوران خواتین کو مسالے دار کھانے یا گرم کھانے سے پرہیز کرنا چاہیے۔ متعلقہ تحقیق پڑھنے کے لیے کلک کریں.

حاملہ خواتین مسالیدار کھانا کیوں پسند کرتی ہیں.(Why do pregnant women crave spicy food)

بتا دیں کہ حاملہ خواتین میں ہارمونل تبدیلیاں ہوتی ہیں، جس کی وجہ سے ان کا دماغ مسالہ دار کھانے کی خواہش کر سکتا ہے۔ اس کے علاوہ ان کے آس پاس موجود مسالوں کی تیز بو بھی انہیں مسالوں کے استعمال کی ترغیب دے سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں-کیا آپ حمل کے دوران پوست کے بیج کھا سکتے ہیں؟ اس کے فائدے اور نقصانات جانیں۔

حمل کے دوران مسالہ دار کھانے کے نقصانات.(Disadvantages of eating spicy during pregnancy)

1- اگر حمل کے دوران خواتین کو قے یا متلی کا سامنا کرنا پڑتا ہے تو مسالہ دار کھانا اس مسئلے کو مزید بڑھا سکتا ہے۔ ایسی صورت حال میں خواتین کو مسالہ دار کھانا محدود مقدار میں استعمال کرنا چاہیے۔

2 – مصالحے دار کھانوں میں مرچ کی مقدار زیادہ ہوتی ہے اور مرچ میں capsaicin مرکب پایا جاتا ہے، ایسی صورتحال میں خواتین کو پیٹ میں درد، درد، پیٹ میں جلن جیسے مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

3 – حمل کے دوران مسالہ دار کھانا چڑچڑاپن آنتوں کے سنڈروم کا خطرہ بڑھا سکتا ہے۔

4- حمل کے دوران اکثر خواتین کو ہاضمے کے مسائل کا سامنا رہتا ہے۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ خواتین کا نظام ہاضمہ بہت سست ہو جاتا ہے جس کی وجہ سے خواتین کو کھانا ہضم کرنے میں دشواری محسوس ہوتی ہے۔ ایسی حالت میں بدہضمی کا مسئلہ مضبوط مسالوں کے استعمال سے ہو سکتا ہے۔

5 – حمل کے دوران مسالہ دار کھانوں کا استعمال سینے میں جلن کا مسئلہ پیدا کر سکتا ہے جسے پیٹ میں جلن کا مسئلہ بھی کہا جاتا ہے۔ واضح رہے کہ حمل کے دوران مسالہ دار کھانوں کا استعمال کھانے کو زیادہ دیر تک پیٹ میں رکھ سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں- حاملہ خواتین میں ڈپریشن ہونے پر یہ 5 علامات نظر آتی ہیں، جانیں اس کا بچے پر کیا اثر ہوتا ہے۔

spicy food during pregnancy side in urdu

مسالہ دار کھانا بچے کی صحت کو کیسے متاثر کرتا ہے.(How does spicy food affect a child’s health)

اگر خواتین حمل کے دوران زیادہ کھانا کھائیں تو اس سے بچے کی صحت پر کوئی فرق نہیں پڑتا۔ لیکن ہاں ہم کہہ سکتے ہیں کہ جنین کا بہترین بستر متاثر ہو سکتا ہے اور اس کا ٹیسٹ متاثر ہو سکتا ہے۔ اگرچہ اس پر مزید تحقیق ہونا باقی ہے لیکن ایسی صورت حال میں خواتین کو مسالہ دار کھانا. ڈاکٹر کے مشورے پر ہی استعمال کرنا چاہیے۔

 

نوٹ مذکورہ بالا نکات سے پتہ چلتا ہے. کہ بعض کاشتکاروں کو حمل کے دوران مسالہ دار کھانا کھانے سے صحت کے لیے کچھ فوائد. کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے، لیکن ایک شخص کو چاہیے کہ وہ درختوں کا استعمال صرف ڈاکٹر کے مشورے پر کریں.، اس کے علاوہ اگر حمل کے دوران پیچیدگیاں. بھی ہوں۔ پھر اسی دن اپنی خوراک میں تبدیلی کرنے سے. پہلے ایک بار کسی ماہر کا مشورہ ضرور لیں۔

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
AllEscort