صحت مند غذا

کیا آپ خالی پیٹ مونگ پھلی کھا سکتے ہیں؟ روزانہ کتنی مونگ پھلی کھانی چاہیے؟ 6 سوالات کے جواب جانیے ماہرین سے

کیا آپ خالی پیٹ مونگ پھلی کھا سکتے ہیں؟ بھیگی ہوئی مونگ پھلی کے فائدے؟ مونگ پھلی کتنی کھانی چاہیے؟ جانیے کچھ سوالات کے جوابات...

سردیوں میں لوگ اکثر دھوپ میں بیٹھ کر مونگ پھلی کھاتے ہیں۔ ایک ہی وقت میں، کچھ لوگ خاندان یا دوستوں کے ساتھ مونگ پھلی سے لطف اندوز ہوتے ہیں. کچھ لوگوں کے لیے مونگ پھلی کا استعمال صرف وقت گزارنے کا ایک ذریعہ ہوتا ہے جب کہ محلے کے لوگ مل کر مونگ پھلی کھا کر اپنی پرانی یادیں تازہ کرتے ہیں۔ دوسری جانب اگر اس کے غذائی اجزاء کی بات کریں تو مونگ پھلی کے اندر توانائی، پروٹین، فائبر، وٹامن ای، سوڈیم، پوٹاشیم، کیلشیم، کاپر، آئرن، میگنیشیم، فاسفورس، زنک وغیرہ پائے جاتے ہیں جو کہ صحت کے لیے بہت مفید ہیں۔ لیکن مونگ پھلی سے متعلق کئی سوالات اکثر لوگوں کے ذہنوں میں ابھرتے ہیں۔ جیسے کہ مونگ پھلی کو خالی پیٹ پینا چاہیے یا نہیں؟ کتنی مونگ پھلی کھائی جا سکتی ہے؟ آج کا مضمون انہی سوالات پر ہے۔ آج اس آرٹیکل کے ذریعے ہم آپ کو مونگ پھلی سے متعلق کچھ سوالات کے جوابات بتائیں گے۔

1- کیا مونگ پھلی کو خالی پیٹ کھایا جا سکتا ہے.(Can peanuts be consumed on an empty stomach)

ڈاکٹر کے مطابق مونگ پھلی خالی پیٹ نہیں کھانی چاہیے۔ ورنہ یہ پیٹ سے متعلق مسائل کا سبب بن سکتا ہے۔ اس کے علاوہ کسی دوسرے شخص کو بھی الرجی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ اگر کوئی شخص خالی پیٹ مونگ پھلی کا استعمال کرنا چاہے تو وہ انہیں بھگو کر کھا سکتا ہے۔ ایسا کرنے سے نہ صرف مونگ پھلی کو ہضم کرنا آسان ہوگا بلکہ مونگ پھلی کو بھگونے سے اس کے فوائد بھی بڑھ جاتے ہیں۔

2- بھیگی ہوئی مونگ پھلی کے فائدے.(Benefits of soaked peanuts)

بھیگی ہوئی مونگ پھلی آپ کی صحت کے لیے بہت فائدہ مند ہو سکتی ہے۔ اس میں کیلوریز کے ساتھ ضروری غذائی اجزاء بھی ہوتے ہیں۔ اس صورت میں یہ جسم کی تعمیر میں مدد کر سکتا ہے. اس میں اینٹی آکسیڈنٹس اور فلیوونائڈز جیسے عناصر بھی ہوتے ہیں۔ ایسی حالت میں یہ بہت سے مسائل کو حل کرنے میں مفید ہے۔

یہ بھی پڑھیں- آملہ پاؤڈر میں شہد ملا کر کھانےسے صحت کو یہ 5 فائدے ملتے ہیں، استعمال کرنے کا طریقہ جانیں۔

3- دن میں مونگ پھلی کب کھانی چاہیے.(When to eat peanuts in a day)

مونگ پھلی کھانے کی بات کرنے پر سائنسدانوں کی طرف سے کوئی تحقیق موجود نہیں ہے۔ ایسی صورتحال میں اگر ڈاکٹر کی بات مانی جائے تو انسان بھنی ہوئی مونگ پھلی یا بھیگی ہوئی مونگ پھلی کو صحت بخش ناشتے کے طور پر کھا سکتا ہے۔ لیکن خالی پیٹ مونگ پھلی کھانے سے گریز کرنا چاہیے۔

 

4- مونگ پھلی کتنی کھانی چاہیے.(How much peanuts should be eaten)

ہمارے پاس اس سے متعلق ایک تحقیق ہے، جس کے ذریعے انسان روزانہ مونگ پھلی کھا سکتا ہے۔ دوسری جانب روزانہ ایک مٹھی مونگ پھلی کھانے سے صحت کے لیے بہت سے فوائد حاصل ہوتے ہیں۔ متعلقہ تحقیق پڑھنے کے لیے یہاں کلک کریں…

5 – مونگ پھلی کو کیسے محفوظ رکھا جائے.(How to preserve peanuts)

آئیے آپ کو بتاتے ہیں کہ اگر آپ مونگ پھلی کو زیادہ دیر تک ذخیرہ کرنا چاہتے ہیں تو آپ مونگ پھلی کو ایئر ٹائٹ جار میں رکھ سکتے ہیں۔ دوسری جانب اگر انہیں کسی ٹھنڈی اور تاریک جگہ پر رکھا جائے تو وہ کئی مہینوں تک آپ کا ساتھ دے سکتے ہیں۔ خیال رہے کہ مونگ پھلی سے کیڑے بھی نکلتے ہیں۔ اس لیے انہیں وقتاً فوقتاً چیک کرتے رہیں۔ انہیں زیادہ دیر تک ذخیرہ کرنے سے گریز کریں۔

things to know about peanuts in urdu

6 – اگر آپ ضرورت سے زیادہ مونگ پھلی کھاتے ہیں تو کیا ہوتا ہے.(What happens if you eat more peanuts)

جو لوگ مونگ پھلی کا زیادہ استعمال کرتے ہیں انہیں سینے کی جلن یعنی تیزابیت کے مسئلے کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ اس کے علاوہ مونگ پھلی کا اثر بہت گرم ہوتا ہے، ایسی حالت میں اس کا زیادہ استعمال جسمانی درجہ حرارت کو بھی متاثر کر سکتا ہے۔ اس کے علاوہ اس شخص کو الرجی کے مسئلے کا بھی سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: انجیر کا دودھ صحت کے لیے فائدہ مند ہے، جانیے اسے پینے کے 4 فائدے.

نوٹ – اوپر بتائے گئے نکات سے پتہ چلتا ہے کہ مونگ پھلی کا استعمال صحت کو بہت سے فوائد فراہم کر سکتا ہے۔ حالانکہ اس سے پہلے انسان کو معلوم ہونا چاہیے کہ کتنی مونگ پھلی کھانی ہے اور وہ شخص کسی بھی وقت مونگ پھلی کھا سکتا ہے۔ جو لوگ کسی خاص غذا پر عمل کر رہے ہیں یا کسی سنگین بیماری میں مبتلا ہیں، وہ اپنی خوراک میں شامل کرنے سے پہلے ایک بار مونگ پھلی ضرور لیں۔

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button