جلد کی حفاظت:skincare in Urdu

چہرے سے مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات کو دور کرنے کے لیے ان 5 آسان طریقوں پر عمل کریں۔

چہرے پر موجود مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات آپ کی خوبصورتی کو کم کرتے ہیں، جانیں انہیں دور کرنے کے آسان طریقے۔

چہرے پر مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات آپ کی خوبصورتی کو کم کرنے کا کام کرتے ہیں۔ جلد پر ایکنی، کیل مہاسوں اور بلیک ہیڈز کے نشانات کی موجودگی کی وجہ سے نہ صرف خوبصورتی ماند پڑتی ہے. بلکہ مستقبل میں دیگر کئی مسائل بھی جنم لے سکتے ہیں۔ دراصل، چہرے پر مہاسے یا مہاسے تیل کی زیادہ پیداوار (سیبم کی پیداوار)، بیکٹیریا. ہارمونل عدم توازن اور جلد کے مردہ خلیوں کی وجہ سے ہوتے ہیں۔ یہ نہ صرف چہرے کی خوبصورتی کو کم کرتا ہے بلکہ بعض اوقات ناقابل برداشت درد بھی دیتا ہے۔ آپ چہرے پر موجود مہاسوں اور داغ دھبوں کو دور کرنے کے لیے ہر طرح کی تدابیر اپناتے ہیں۔ کئی بار کچھ ایسی مصنوعات کا استعمال جن میں کیمیکلز کا استعمال زیادہ ہوتا ہے. جلد پر کئی سنگین مسائل پیدا ہو جاتے ہیں۔ چہرے سے مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات کو آسانی سے دور کرنے کے لیے آپ ان طریقوں کو اپنا سکتے ہیں۔

tips to remove acne and pimple face in urdu

 

چہرے سے مہاسوں اور داغ دھبوں کو دور کرنے کے لیے ٹوٹکے.(Tips To Remove Acne And Pimple Marks From Face)

اگر چہرے پر مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات کو بروقت ختم نہ کیا جائے تو یہ عمر بھر رہ سکتے ہیں۔ ان نشانات کی وجہ سے چہرے کی خوبصورتی بھی متاثر ہوتی ہے۔ یہ مسئلہ تیل والی جلد والے لوگوں میں زیادہ پایا جاتا ہے۔ اس سے نہ صرف چہرے کی خوبصورتی کم ہوتی ہے بلکہ اس کی وجہ سے جلد سے متعلق کئی دیگر مسائل بھی جنم لیتے ہیں۔ چہرے سے مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات کو ختم کرنے کے لیے آپ ان موثر اقدامات کو اپنا سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: اگر آپ ایکنی سے چھٹکارا پانا چاہتے ہیں. تو یہ 5 ہربل ڈرنکس پی لیں، صحت کو ملیں گے اور بھی بہت سے فائدے

1. ایکنی اور پمپلز کے داغ دور کرنے کے لیے کھیرے کا استعمال.(Use of Cucumber to Remove Acne and Pimples Stains)

کھیرے کا استعمال چہرے سے مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات کو دور کرنے کے لیے بہت مفید ہے۔ کھیرے کے استعمال سے آپ نہ صرف چہرے سے دھبے اور مہاسوں کے نشانات کو آسانی سے دور کرسکتے ہیں بلکہ یہ آپ کے چہرے پر موجود مہاسوں کو دور کرنے میں بھی فائدہ مند ہے۔ سب سے پہلے کھیرے کو پیس لیں اور پیسٹ بنا لیں۔ اس پیسٹ کو آئس کیوب بنانے کے لیے اسے فریزر میں رکھ دیں۔ جب اس کا آئس کیوب تیار ہو جائے تو اسے سوتی کپڑے میں لپیٹ کر جلد پر لگائیں۔ چند دنوں تک ایسا کرنے سے فائدہ ہو گا۔

2. سنتری کے چھلکے کا پاؤڈر.(Orange Peel Powder)

آپ اپنی جلد پر نارنجی کا چھلکا استعمال کر سکتے ہیں۔ یہ آپ کے چہرے سے بلیک ہیڈز، ایکنی اور داغ دھبوں کو دور کرتا ہے۔ اس کے ساتھ نارنجی کے چھلکے کو چہرے پر لگانے سے یہ آپ کے چہرے کو نکھار دینے کا کام کرتا ہے۔ نارنجی کے چھلکے کا پاؤڈر چہرے سے مہاسوں اور دھبوں کو دور کرنے کے لیے فائدہ مند ہے۔ سب سے پہلے سنگترے کے چھلکے کا پاؤڈر لیں اور اس میں تھوڑی مقدار میں شہد ملا کر پیسٹ بنائیں۔ اس پیسٹ کو چہرے کے داغوں والی جگہوں پر لگائیں۔

یہ بھی پڑھیں: ایلوویرا اور لیموں لگانے کے فائدے: چہرے کے ان 5 مسائل کو دور کرنے کے لیے ایلو ویرا جیل اور لیموں کا رس لگائیں۔

3. ایلو ویرا اور پیاز کا رس.(Aloe Vera and Onion Juice)

ایلوویرا اور پیاز کے رس کا استعمال چہرے سے مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات کو دور کرنے میں فائدہ مند ہے۔ پیاز کا رس بہت فائدہ مند سمجھا جاتا ہے اور چند ہی دنوں میں اس کا اثر ظاہر ہونا شروع ہو جاتا ہے۔ پیاز کے رس میں ایک چمچ ایلوویرا کا رس اور ایک چمچ شہد ملا کر چہرے پر لگانے سے اس مسئلہ میں فائدہ ہوتا ہے۔

4. ناریل کے تیل کا استعمال(Using Coconut Oil)

چہرے پر ناریل کے تیل کا استعمال ایکنی اور مہاسوں کو دور کرنے میں فائدہ مند سمجھا جاتا ہے۔ چہرے کو نکھارنے کے لیے آپ اسے روزانہ بھی استعمال کر سکتے ہیں۔ چہرے سے مہاسوں اور مہاسوں کے نشانات کو دور کرنے کے لیے ناریل کے تیل کو چہرے پر متاثرہ جگہ پر لگائیں اور چند گھنٹوں کے لیے لگا رہنے دیں۔ اس کے بعد چہرے کو پانی سے دھو لیں۔ چند دن ایسا کرنے سے فائدہ ہوتا ہے۔

tips to remove acne and pimple face in urdu

5. پھٹکری اور گلاب کا پانی.(Alum and Rose Water)

پھٹکری اپنی دواؤں کی خصوصیات کے لیے مشہور ہے۔ لیکن یہ جلد کی دیکھ بھال کے لیے بھی بہت فائدہ مند ہے۔ اگر آپ پھٹکڑی کے پاؤڈر کو جلد کی دیکھ بھال کرنے والے کسی اچھے اجزا کے ساتھ ملا کر استعمال کرتے ہیں تو یہ آپ کی جلد کو بہت سے فوائد پہنچا سکتا ہے۔ پھٹکری اور عرق گلاب کو ایک ساتھ استعمال کرنا آپ کے چہرے کے مہاسوں اور مہاسوں کو دور کرنے میں فائدہ مند ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button