خواتین کی صحت

حمل کے دوران ناف میں خارش کیوں ہوتی ہے؟ اس طرح حفاظت کرو

حمل کے دوران ناف میں خارش بہت سی وجوہات کی وجہ سے ہو سکتی ہے۔ اس سے بچنے کے لیے آپ درج ذیل تدابیر اختیار کر سکتے ہیں۔ آئیے اس بارے میں جانتے ہیں-

حمل کے دوران جسم میں کئی ہارمونل تبدیلیاں ہوتی ہیں۔ یہ ہارمونل تبدیلیاں جسم میں مختلف علامات کا سبب بن سکتی ہیں. بشمول صبح کی بیماری، سوجن ٹخنوں اور وزن میں اضافہ۔ اس کے علاوہ بعض خواتین کو حمل کے دوران پیٹ اور ناف میں بہت زیادہ خارش ہونے لگتی ہے۔ آج اس آرٹیکل میں ہم اس بارے میں تفصیل سے جانیں گے کہ حمل کے دوران ناف میں خارش کیوں ہوتی ہے۔

what causes itching on belly during pregnancy in urud

حمل کے دوران ناف میں خارش کی وجوہات.(Causes of itching in navel during pregnancy)

1. جلد کو کھینچنا.(Skin Stretching)

حمل کے دوران، جلد میں بہت زیادہ کھنچاؤ ہوتا ہے۔ ایسی حالت میں ناف میں خارش ہونا کافی عام بات ہے۔ دراصل، اس دوران آپ کے پیٹ کی جلد بہت زیادہ پھیل جاتی ہے۔ ایسی حالت میں پیٹ میں بہت کھنچاؤ رہتا ہے۔ ہیوی ڈیوٹی اسٹریچنگ آپ کے پیٹ کے بٹن کے گرد پتلی جلد کو بھی کھینچ سکتی ہے۔ اس کی وجہ سے آپ کی ناف میں خارش کا مسئلہ ہو سکتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ ناف میں درد اور جلن کا باعث بھی بن سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  حمل کے دوران بادام کا دودھ پینے سے یہ 5 فائدے حاصل ہوتے ہیں، یہ ماں اور بچے دونوں کے لیے فائدہ مند ہے۔

2. خشک جلد.(Dry Skin)

خشک جلد جلد میں خارش کا باعث بھی بن سکتی ہے۔ حاملہ خواتین کے جسم میں ہارمونل تبدیلیاں دیکھنے میں آتی ہیں جس کی وجہ سے جلد بہت خشک ہوجاتی ہے۔ اس کے ساتھ یہ جلد کی لچک کو بھی متاثر کرتا ہے جس کی وجہ سے ناف میں خارش ہونے لگتی ہے۔

3. پروریٹک چھپاکی پیپولس اور حمل کی تختی.(Pruritic Urticarial Papules and Plaque of Pregnancy)

پروریٹک چھپاکی کے پیپولس اور پلاک آف حمل  ناف میں خارش کا سبب بن سکتے ہیں۔ اسے اکثر حمل کے دانے یا حمل کا erythema بھی کہا جاتا ہے۔ اس کی وجہ سے حمل کے چند مہینوں کے بعد آپ کی جلد پر چھوٹے سرخ دھبے اور چھتے بن جاتے ہیں۔ اس کی وجہ سے پیٹ پر پیچ یا تختیاں بننا شروع ہو جاتی ہیں۔ ایسی حالت میں آپ ناف پر خارش کا مسئلہ بھی دیکھ سکتے ہیں۔

4. Pemphigoid Gestational

یہ حمل سے متعلق آٹو امیون ڈس آرڈر ہے۔ اس کی وجہ سے آپ کی ناف کے کھلنے کا مسئلہ بھی ہو سکتا ہے۔ یہ مسئلہ حمل کے دوران کسی بھی وقت شروع ہو سکتا ہے۔ لیکن حمل کے دوسرے یا تیسرے سہ ماہی میں اس کا امکان زیادہ ہوتا ہے۔ صرف میری صحت

5. حمل کی انٹراہیپیٹک کولیسٹیسیس.(Intrahepatic Cholestasis of Pregnancy)

حمل کا کولیسٹیسیس عام طور پر ہاتھوں اور پیروں میں شدید خارش کے ساتھ شروع ہوتا ہے، لیکن خارش آپ کے جسم کے دیگر حصوں بشمول آپ کے پیٹ میں بھی پھیل سکتی ہے۔ اس کی وجہ سے خواتین کی ناف میں خارش کا مسئلہ ہوسکتا ہے۔

حمل کے دوران ناف میں خارش سے کیسے نجات حاصل کی جائے؟(How to get relief from itching in navel during pregnancy)

ناف میں خارش کے مسئلے سے نجات کے لیے آپ درج ذیل تدابیر کا سہارا لے سکتے ہیں۔ آئیے اس بارے میں جانتے ہیں-

موئسچرائزر.(Moisturizer)

خشک جلد کی وجہ سے ہونے والی خارش کو دور کرنے کے لیے، اپنے پورے پیٹ اور ناف پر بھاری موئسچرائزر کی ایک موٹی تہہ لگائیں۔ نہانے یا نہانے کے فوراً بعد اپنی جلد پر زیادہ سے زیادہ لوشن لگائیں۔ اس سے آپ کو خارش کے مسئلے سے نجات مل سکتی ہے۔

نیم گرم پانی سے نہانے سے گریز کریں۔(Avoid bathing with lukewarm water)

اگر آپ ناف میں خلجی سے پریشان ہیں تو نیم گرم پانی سے نہانے سے گریز کریں۔ کیونکہ گرم پانی جلد کو خشک کر سکتا ہے۔ اگر آپ نیم گرم پانی سے بنا رہے ہیں تو اس کے فوراً بعد موئسچرائزر لگائیں۔

یہ بھی پڑھیں:  حمل کے دوران بیگن کیوں نہیں کھانا چاہیے؟ ماہرین سے جانیں کہ کیا نقصان ہو سکتا ہے۔

what causes itching on belly during pregnancy in urud

کولڈ کمپریس.(cold compress)

معدے پر ایکزیما کا مسئلہ ہو تو کولڈ کمپریس بنائیں۔ اس سے ناف میں خارش کا مسئلہ دور کیا جا سکتا ہے۔ اس کے علاوہ آپ کو فوری سکون ملتا ہے۔

ناف میں خارش کے مسئلے سے نجات کے لیے آپ ان علاجوں کی مدد لے سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ، اس کی وجوہات کی بنیاد پر اس کا علاج کیا جا سکتا ہے۔

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
AllEscort