صحت مند غذا

کون سی سبزیاں کھائیں اور کون سی سبزیاں سے پرہیز کیا جائے گردے میں پتھری نہ ہو؟

بہت سے لوگوں کو ان دنوں گال بلیڈر (پتہ) اور گردے میں پتھری کا مسئلہ درپیش ہے۔ پتھری کے مسئلے کی وجہ سے کسی کو ناقابل برداشت درد کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ہمارے جسم میں پتھری گردے یا گال بلیڈر (پتہ)دونوں میں بن سکتی ہے۔ عام طور پر گردوں کی پتھری کا علاج ادویات اور مناسب خوراک سے کیا جا سکتا ہے۔ ایک ہی وقت میں ، پتتاشی میں مبتلا زیادہ تر مریضوں کا علاج سرجری کے ذریعے کیا جاتا ہے۔ گردے کی پتھری پیشاب میں پائے جانے والے کیمیکلز کی وجہ سے ہوتی

ہے۔ جب پیشاب میں کیمیکل کی مقدار بڑھتی ہے تو یہ آہستہ آہستہ گاڑھا ہو جاتا ہے اور پتھروں کی شکل اختیار کر لیتا ہے۔ گردے ہمارے جسم میں سیالوں اور کیمیکلز کی سطح کو برقرار رکھنے میں ہماری مدد کرتا ہے۔ اس کے علاوہ گردے خون کو صاف کرنے میں ہماری مدد کرتا ہے۔ یہ جسم سے گندگی نکالتا ہے اور اسے باہر نکالتا ہے۔ یہ ہمارے جسم میں سوڈیم ، پوٹاشیم اور کیلشیم کی سطح کو کنٹرول کرنے میں ہماری مدد کرتا ہے۔ ایسی صورتحال میں سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ گردے کی پتھری میں کس قسم کی سبزیوں کا استعمال کیا جائے اور کون سی سبزی سے پرہیز کیا جائے؟

غذائی ماہر کامنی کماری اس کے بارے میں بتاتی ہیں کہ گردے کی پتھری کی صورت میں کون سی سبزی کھانی ہے اور کون سی کھانی ہے۔ یہ ہمارے خون کی رپورٹ پر منحصر ہے۔ اگر آپ کے خون میں پوٹاشیم کی زیادتی ہے تو سبز پتوں والی سبزیوں جیسے پالک ، ٹماٹر ، آلو کو کم مقدار میں استعمال کرنا چاہیے۔ ہمیں تفصیل سے بتائیں کہ کون سی سبزی کھانی ہے اور کون سی نہیں

Which vegetables to eat and which vegetables to avoid to avoid kidney stones?
Which vegetables to eat and which vegetables to avoid to avoid kidney stones?

 

پتھر ہونے پر مجھے کون سی سبزیاں کھانی چاہئیں؟ (What Should Eat in Kidney Stone)

گردے کی پتھری والے مریضوں کو کیلشیم سے بھرپور سبزیاں کھانی چاہئیں۔ اس کے علاوہ آپ اپنی خوراک میں اینٹی آکسیڈنٹس سے بھرپور سبزیاں بھی شامل کر سکتے ہیں۔ یہ آپ کو پتھر کی تشکیل کو روکنے میں مدد دے سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں.گردوں کو صحتمند رکھنے والی چند غذائیں

کالی

گردے کی پتھری کے مسئلے پر قابو پانے کے لیے کیلشیم سے بھرپور غذا کھانی چاہیے۔ کالے میں کیلشیم کی مقدار زیادہ ہوتی ہے جو پتھری کے مسئلے کو دور کرنے میں مددگار ثابت ہو سکتی ہے۔ زیادہ تر لوگ کالی کو بطور سلاد استعمال کرتے ہیں۔

بروکولی

بروکولی کیلشیم اور اینٹی آکسیڈنٹس سے بھرپور ہے۔ آپ اس سبزی کو اپنی خوراک میں شامل کر سکتے ہیں۔ اس سے پتھری کو روکنے میں مدد مل سکتی ہے۔ آپ بروکولی کو سلاد ، سبزیوں یا دیگر چیزوں میں استعمال کر کے کھا سکتے ہیں۔ یہ آپ کی صحت کے لیے بہت فائدہ مند ثابت ہو سکتا ہے۔

شملہ مرچ

سرخ اور پیلے رنگ کے شملہ مرچ صحت کے لیے بہت مفید سمجھے جاتے ہیں۔ یہ گردے کی پتھری کے مریضوں کے لیے بھی فائدہ مند ہے۔ یہ وٹامن سی ، وٹامن کے ، وٹامن اے ، فائبر اور بیٹا کیروٹین سے بھرپور ہے۔ ساتھ ہی اس میں کیلوریز نہ ہونے کے برابر ہوتی ہیں ، جس کی وجہ سے کولیسٹرول میں اضافہ نہیں ہوتا۔ یہ گردوں کے مریضوں کے لیے بہت فائدہ مند ثابت ہو سکتا ہے۔ اس کے استعمال سے ، وہ پیٹ کے درد سے متعلقہ مسئلہ کو کم کرسکتے ہیں۔

مٹر اور پھلیاں

مٹر اور پھلیاں جیسی سبزیوں میں 70 فیصد سے زیادہ پانی ہوتا ہے جو کسی بھی شخص کو سم ربائی میں مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔ اس کے ساتھ کیلشیم ، پروٹین ، آئرن ، میگنیشیم ، فاسفورس ، پوٹاشیم ، سوڈیم اور زنک اس میں موجود ہیں۔ جو آپ کو جسم کی کئی بیماریوں پر قابو پانے میں مدد دیتا ہے۔ گردے کی پتھری کے مریض مٹر کھا سکتے ہیں۔ یہ آپ کو جسم کو ڈیٹاکس کرنے میں مدد کرتا ہے۔ ایسی صورت حال میں مٹر جسم سے پتھری کو ہٹانے میں بھی آپ کے لیے مددگار ثابت ہو سکتا ہے۔

لیموں

پتھر کے مسائل کی صورت میں سائٹرک ایسڈ سے بھرپور خوراک کا استعمال کرنا چاہیے۔ یہ گردے کی پتھری کو کم کرنے یا روکنے میں مدد کرتا ہے۔ لیموں ایک ایسی غذائی چیز ہے ، جو سائٹرک ایسڈ سے بھرپور ہوتی ہے۔ اس کا تازہ رس پانی میں ملا کر یا سبزیوں میں ملا کر کھایا جا سکتا ہے۔

کون سی سبزیاں گردے کی پتھری سے بچتی ہیں؟(Which Vegetables Avoid in Kidney Stone)

بینگن

اگر آپ کے گردے میں پتھری ہے تو آپ کو بینگن کا استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ دراصل ، بینگن کے بیجوں میں آکسالیٹ بڑی مقدار میں پایا جاتا ہے ، جو پتھری سے متاثرہ مریضوں کے لیے نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے۔ اگر آپ بینگن کھانا چاہتے ہیں تو اس کے بیج نکال کر بینگن کھائیں۔

پالک

پتھری کا مسئلہ ہو تو پالک کو زیادہ استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ دراصل ، پالک میں آکسی لیٹ کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔ خون میں آکسالیٹ کی زیادتی کی وجہ سے آپ کی پتھری بڑھ سکتی ہے۔ ایسی صورتحال میں پتھر کے مریضوں کو پالک کے استعمال سے پرہیز کرنا چاہیے۔

بھی پڑھیں

ٹماٹر

ٹماٹر کے بیج میں آکسالیٹ ہوتا ہے۔ اس لیے اگر آپ کے گردے میں پتھری ہو تو ٹماٹر کا زیادہ استعمال نہ کریں۔ اس سے آپ کی پریشانی بڑھ سکتی ہے۔ اگرچہ اس میں تھوڑی مقدار میں آکسالیٹ ہوتا ہے ، لیکن اگر آپ زیادہ ٹماٹر کھاتے ہیں تو پھر مسائل ہو سکتے ہیں۔ صحیح مقدار میں ٹماٹر کھانے سے آپ کو پتھری میں زیادہ پریشانی کا سامنا نہیں کرنا پڑتا ہے۔

کچھ اہم تجاویز۔(Other Tips)

  • اگر آپ کو گردے کی پتھری کا مسئلہ ہے تو زیادہ سے زیادہ پانی پائیں۔
    روزانہ ورزش.
  • غذا میں سبز سبزیاں اور پھل ثابت کریں۔
  • شراب اور سگریٹ نوشی سے دور رہنے کی کوشش کریں۔
  • اپنے جسم کو خاموش نہ رکھیں۔ یہ جسم کے دیگر مسائل کو بڑھا سکتا ہے۔
  • اگر جسم میں کوئی مسئلہ ہو تو تناؤ نہ لیں۔
  • کافی مقدار میں سیال پیو۔
  • اپنی خوراک میں وٹامن ڈی سے بھرپور غذائیں شامل کریں۔ اس کی وجہ سے کیلشیم جسم میں جذب ہوتا ہے۔
  • اگر آپ کو گردے کی پتھری کا مسئلہ ہے تو اپنی خوراک کا انتخاب صرف ڈاکٹر کے مشورے سے کریں۔ ڈاکٹر آپ کے

خون کی رپورٹ کی بنیاد پر صحیح خوراک کا مشورہ دے سکتا ہے۔ اس کے علاوہ اپنی خوراک میں لیمونیڈ جیسی چیزیں ضرور شامل کریں۔ ڈاکٹر کی دی گئی تمام ہدایات پر پوری طرح عمل کریں ، تاکہ مزید سنجیدگی سے بچا جا سکے۔ اگر علاج کے دوران آپ کا مسئلہ خراب ہو جائے تو اپنے ڈاکٹر کو اس کے بارے میں بتائیں۔ تاکہ آپ کا صحیح علاج کیا جا سکے۔

 

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button