صحت کا دیسی علاج

دانت کے درد سے نجات پانے کے لیے لہسن کا استعمال ان 5 طریقوں سے کریں۔

Wisdom Tooth Pain Treatment: جب عقل کا دانت باہر آجائے تو مسوڑھوں میں شدید درد اور سوجن ہو سکتی ہے۔ درد کے لیے لہسن کے استعمال کا طریقہ جانیں۔

جب عقل کا دانت نکلتا ہے تو درد محسوس ہوتا ہے۔ عام طور پر حکمت کے چار دانت ہوتے ہیں۔ دو اوپر کے جبڑے پر اور دو نیچے۔ ضروری نہیں کہ عقل کا دانت نکالنے پر ہر کسی کو درد ہو لیکن کچھ لوگ ناقابل برداشت درد محسوس کرتے ہیں۔ دانتوں کے درد کے ساتھ مسوڑھوں سے پیپ نکلنا، بخار، سوجن، مسوڑھوں میں سرخی وغیرہ جیسے مسائل بھی ہو سکتے ہیں۔ دانتوں کے درد کے مسئلے کو دور کرنے کے لیے لہسن کا استعمال فائدہ مند سمجھا جاتا ہے۔ لہسن میں سوزش کی خصوصیات ہوتی ہیں۔ اس کے استعمال سے سوجن اور درد کا مسئلہ دور ہو جاتا ہے۔ لہسن کے استعمال کا طریقہ مزید جانیں۔ 

1. داڑھ کے درد کو دور کرنے کے لیے لہسن.(Garlic to remove pain in the molar)

لہسن میں ایلیسن نامی عنصر پایا جاتا ہے۔ ینالجیسک خصوصیات یعنی درد کم کرنے والی خصوصیات بھی لہسن میں پائی جاتی ہیں۔ لہسن اینٹی بیکٹیریل خصوصیات سے بھرپور ہوتا ہے جو منہ میں انفیکشن کے مسئلے سے بھی نجات دلاتا ہے۔ لہسن استعمال کرنے کے لیے لہسن کے لونگ کو پیس کر پیسٹ تیار کریں۔ اسے حکمت کے دانت پر لگائیں۔ اس سے درد کم ہو جائے گا۔ لہسن کی ایک لونگ کو دانت میں دبا کر بھی رکھ سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں- سونف کے پاؤڈر کو نیم گرم پانی میں ملا کر رات کو پی لیں، آپ کو بے پناہ فائدے حاصل ہوں گے۔

wisdom-tooth-pain-treatment-with-garlic-in-Urdu
All Image Source: Freepik.com

2. لہسن کے پانی سے غرارے کریں۔(Gargle with Garlic Water)

دانت کے درد کو دور کرنے کے لیے لہسن کو پانی میں ڈال کر ابالیں۔ اس پانی سے دھولیں۔ ایسا کرنے سے درد اور الرجی دونوں سے آرام ملے گا۔ پتھری نمک کو بھی پانی میں ملایا جا سکتا ہے۔ گرم پانی کے تھیلے میں گرم یا نیم گرم پانی بھر کر بھی آبپاشی کی جا سکتی ہے۔ لہسن کو آیوروید میں دانتوں کے لیے فائدہ مند کہا جاتا ہے۔ لہسن میں اینٹی بیکٹیریل، اینٹی فنگل خصوصیات ہیں۔ اس کے استعمال سے انفیکشن کا خطرہ بھی دور ہو جاتا ہے۔

3. لہسن اور لونگ کا استعمال.(sing Garlic and Cloves)

لونگ میں جراثیم کش اور ینالجیسک خصوصیات ہیں۔ دانتوں کے درد کو کم کرنے کے لیے لہسن کا پیسٹ بنالیں۔ اس میں لونگ کا تیل ڈالیں۔ اس پیسٹ کو عقل دانت پر لگائیں۔ اس سے درد کم ہو جائے گا۔ جوڑوں کے درد کو دور کرنے کے لیے لہسن اور لونگ کا مرکب بھی فائدہ مند سمجھا جاتا ہے۔

4. امرود کے پتے اور لہسن.(Guava Leaves and Garlic)

امرود کے پتے ینالجیسک خصوصیات رکھتے ہیں۔ امرود کے پتے درد اور انفیکشن کو کم کرنے کے لیے فائدہ مند تصور کیے جاتے ہیں۔ امرود کے پتوں کو صاف کر کے گودا بنا لیں۔ اس میں لہسن کا پیسٹ شامل کریں۔ اسے دانتوں پر لگائیں۔ 20 منٹ بعد صاف پانی سے دھولیں۔ درد اور سوجن دور ہو جائے گی۔

5. لہسن اور کچا پیاز.(Garlic and Raw Onion)

دانتوں کے درد کو دور کرنے کے لیے لہسن کی لونگ کاٹ کر پیسٹ بنالیں۔ اس میں کچی پیاز کا پیسٹ شامل کریں۔ کچے پیاز میں جراثیم کش اور جراثیم کش خصوصیات ہوتی ہیں۔ پیاز میں ایک flavonoid بھی پایا جاتا ہے جسے quercetin کہتے ہیں۔ یہ درد کو کم کرنے میں مدد کرتا ہے۔ لہسن اور کچی پیاز کا استعمال مسوڑھوں کو صحت مند رکھنے کے لیے فائدہ مند سمجھا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں- ہر روز ہلدی کے پانی سے غرارےکرنے سے بہت سے زبردست فائدے حاصل ہوتے ہیں۔

wisdom-tooth-pain-treatment-with-garlic-in-Urdu
All Image Source: Freepik.com

اگر عقل کے دانت نکل جاتے ہیں تو آپ کو ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہیے۔ ان کے ذریعے آپ کو صحیح علاج ملے گا۔ لہسن کا استعمال صرف درد کو کم کر سکتا ہے۔ بعض اوقات عقل کے دانت مسوڑھوں میں پھنس جاتے ہیں جنہیں طبی طریقہ کار کے ذریعے نکالنا پڑتا ہے۔

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button