صحت کا دیسی علاج

زیرہ پانی پینے کے نقصانات: زیرہ کا پانی زیادہ پینا صحت کو یہ 6 نقصان پہنچا سکتا ہے

زیرہ کا پانی زیادہ پینا بھی صحت کو نقصان پہنچا سکتا ہے۔ لہٰذا زیرہ کا پانی محدود مقدار میں پیئے۔

زیرہ کھانے کا ذائقہ بڑھانے کے لیے بڑے پیمانے پر استعمال کیا جاتا ہے۔ خواہ وہ کھانے کا مزاج ہو یا گرم مسالہ زیرہ کا مرکب تقریباً ہر ایک میں استعمال ہوتا ہے۔ یہ نہ صرف کھانے کا ذائقہ بڑھانے میں مددگار ہے بلکہ اس سے صحت سے متعلق بہت سے مسائل پر قابو پایا جا سکتا ہے۔ صرف زیرہ ہی نہیں، زیرہ کا پانی بھی صحت کے لیے بہت فائدہ مند ہے۔ وزن کم کرنے سے لے کر کولیسٹرول کو کنٹرول کرنے تک، زیرہ کا پانی آپ کے لیے فائدہ مند ہے۔ لیکن کیا آپ زیرہ پینے کے نقصانات کے بارے میں جانتے ہیں؟ اگر نہیں تو آئیے آپ کو بتاتے ہیں کہ زیرہ کا پانی زیادہ پینا صحت کو بھی نقصان پہنچا سکتا ہے۔ ہاں، کسی بھی چیز کی زیادتی صحت کے لیے نقصان دہ ہو سکتی ہے۔ یہی بات زیرہ کے پانی پر بھی لاگو ہوتی ہے۔ اگر آپ زیرے کا پانی زیادہ مقدار میں پیتے ہیں تو یہ کئی طرح کے مسائل کو بڑھا سکتا ہے۔ آئیے جانتے ہیں زیرہ پانی پینے کے صحت کے فوائد۔

زیرہ پانی کے مضر اثرات. Side Effects of zeera Water 

اگر آپ زیرہ کا پانی ضرورت سے زیادہ پیتے ہیں تو اس سے صحت سے متعلق کئی مسائل پیدا ہوسکتے ہیں۔ جیسے-

ہضم کے مسائل. digestive problems

زیرہ کا پانی زیادہ پینا ہاضمے اور گیسٹرائٹس سے متعلق مسائل کا باعث بن سکتا ہے۔ لیکن یاد رکھیں کہ اگر آپ زیرے کا پانی محدود مقدار میں پیتے ہیں. تو اس سے کوئی نقصان نہیں ہوتا۔ اس لیے ہاضمے کو صحت مند رکھنے کے لیے زیرے کا پانی محدود مقدار میں پینا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں-   گھی اور کلونجی کھانے سے آپ کے جسم کو یہ 5 فائدے حاصل ہوتے ہیں، طریقہ جانیں۔

گردے اور جگر کو متاثر کرتا ہے۔

zeera water side effects in urdu

زیرہ کا پانی زیادہ پینے سے گردے اور جگر سے متعلق مسائل پیدا ہوسکتے ہیں۔ اگر آپ اس کی زیادہ مقدار لیتے ہیں تو یہ آپ کے گردے کو متاثر کرتا ہے۔ اس لیے زیرہ کا پانی ڈاکٹر یا ماہر غذائیت کے مشورے کے مطابق لیں۔

دودھ پلانے والی خواتین میں دودھ کی کمی ہوتی ہے۔

اگر آپ دودھ پلا رہے ہیں تو زیرہ کا پانی محدود مقدار میں استعمال کریں۔ دراصل، اگر آپ زیرہ کا پانی زیادہ مقدار میں استعمال کرتے ہیں، تو اس سے دودھ کی کمی ہوسکتی ہے۔ اس لیے زیرہ کا پانی صرف محدود مقدار میں ہی پیئے۔ اس کے علاوہ اگر آپ کی ڈیلیوری سرجری سے ہوئی ہے تو ڈاکٹر کے مشورے پر ہی زیرہ کا پانی پییں۔

کم خون کی شکر کی سطح.

بہت سے ماہرین بلڈ شوگر کو کم کرنے کے لیے زیرے کا پانی پینے کا مشورہ دیتے ہیں۔ لیکن یاد رکھیں کہ اگر آپ کا بلڈ شوگر کنٹرول میں ہے تو اسے محدود مقدار میں استعمال کریں۔ زیرہ کا پانی زیادہ مقدار میں پینے سے بلڈ شوگر لیول کم ہو سکتا ہے۔ جس کی وجہ سے آپ کو کمزوری اور چکر آتے ہیں۔ اس کے علاوہ، اگر آپ کو الرجی ہو تو بھی اس کے استعمال سے پرہیز کریں۔ صرف میری صحت

اسقاط حمل کا خطرہ.

حاملہ خواتین کو بھی زیرہ کا پانی پینے سے پہلے کسی ماہر سے مشورہ کرنا چاہیے۔ درحقیقت زیرے کا پانی زیادہ پینا اسقاط حمل کا باعث بن سکتا ہے۔ کیونکہ اس کا اثر گرم ہوتا ہے جس سے اسقاط حمل ہو سکتا ہے۔ ساتھ ہی ماہواری کے دوران زیرے کا پانی پینے سے خون بہنے میں اضافہ ہوتا ہے۔

متلی کا مسئلہ.

زیرہ کے پانی میں نشہ آور خصوصیات پائی جاتی ہیں۔ ایسی صورتحال میں اگر آپ زیرہ کا پانی زیادہ مقدار میں استعمال کرتے ہیں تو آپ کو متلی اور دماغ سے متعلق مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  کیلشیم جسم کے لیے کیوں ضروری ہے؟ اس کے فوائد، اہم ذرائع اور اضافی کیلشیم کے نقصانات جانیں۔

گیس کا مسئلہ

زیرہ کے پانی کا زیادہ استعمال گیس کے مسائل کا باعث بن سکتا ہے۔ جس کی وجہ سے سینے میں جلن جیسا مسئلہ بھی ہوتا ہے۔

خیال رہے کہ زیرہ کا پانی محدود مقدار میں پینا صحت کے لیے بہت سے فوائد کا حامل ہے۔ لیکن اس کا زیادہ استعمال آپ کی صحت کو نقصان پہنچا سکتا ہے۔ اس لیے زیرہ کا پانی زیادہ نہ پییں۔ اس کے ساتھ ہی اگر آپ کو شدید پریشانی کا سامنا ہے تو ڈاکٹر کے مشورے کے مطابق ہی اس کا استعمال کریں۔

Aarif Rao

Arif Rao is a Herbalist, Blogger, Writer, YouTuber, and Digital Content Creator who is helping people by solving their problems and making them physically stable.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button